ہر پاکستانی کی خبر

پاکستان کے وزیر خزانہ اسحاق ڈار ملکی معیشت کو مستحکم کرنے کے لیے کوشاں ہیں۔

Image Source - Google | Image by
Dunya Urdu

وفاقی وزیر خزانہ سینیٹر اسحاق ڈار نے کہا ہے کہ پاکستان میں معیشت کے استحکام کے لیے کوششیں جاری ہیں۔

اسلام آباد میں بین الاقوامی اسلامی بینکنگ کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے اسحاق ڈار نے کہا کہ اسلامی بینکاری نظام ترقی کر رہا ہے اور غربت کو کم کرنے میں معاون ثابت ہو سکتا ہے۔

سپیکر نے کہا کہ سٹیٹ بنک پاکستان میں اسلامک فنانس کو فروغ دینے کے لئے نمایاں کوشش کر رہا ہے اور اس کے گورنر نے اس مقصد کے لئے کافی کام کیا ہے۔ توقع ہے کہ اسلامی مالیات کے نفاذ سے غربت کے خاتمے میں مدد ملے گی۔

وفاقی وزیر کے مطابق اسلامی فنانسنگ دنیا بھر میں تیزی سے پھیل رہی ہے اور غیر مسلم ممالک میں بھی مقبولیت حاصل کر رہی ہے۔ ان کا خیال ہے کہ حکومت کی مالی ضروریات کو پورا کرنے کے لیے اسلامی فنانسنگ کا استعمال کیا جا سکتا ہے۔

اسحاق ڈارنے کہا کہ اسلامی بینکاری کو بہتر بنانے کے لیے اقدامات کیے جا رہے ہیں اور یہ کانفرنس اسلامی فنانسنگ کے مستقبل کی جانب ایک مثبت قدم ہے۔ ان کا خیال ہے کہ اسلامی بینکاری نظام مثبت تبدیلیاں لائے گا اور مستقبل میں بہتری لانے میں مدد دے گا۔ انہوں نے اقتصادی رکاوٹوں کو دور کرنے کے لیے اسلامی ممالک کے درمیان تعاون کی اہمیت پر بھی زور دیا۔

وزیر خزانہ نے کہا کہ اسلامی مالیات پاکستان کی اقتصادی ترقی کے لیے انتہائی اہم ہے اور اس بات کو اجاگر کیا کہ دنیا بھر میں اس کی مالیت 4 ٹریلین ڈالر سے زیادہ ہے۔ مزید برآں، انہوں نے پیش گوئی کی کہ 2026 تک اسلامی مالیات عالمی معیشت میں 59 ٹریلین ڈالر تک پہنچ جائے گی۔

ایک پریس کانفرنس کے دوران اسٹیٹ بینک کے گورنر جمیل احمد نے بتایا کہ اسلامی کیپٹل مارکیٹ ملکی معیشت میں مثبت کردار ادا کر رہی ہے اور اس کا حجم 3 ٹریلین ڈالر تک بڑھ گیا ہے۔

جمیل احمد کے مطابق، گزشتہ دہائی میں پاکستان میں اسلامی بینکاری میں 24 فیصد اضافہ ہوا ہے۔ اسٹیٹ بینک اور ایس ای سی پی مل کر ایسی اصلاحات لانے کے لیے کام کر رہے ہیں جو 2027 تک ملک کی معیشت کو سود سے پاک بنانے کے ہدف کے ساتھ اسلامی مالیاتی شعبے کو مدد فراہم کریں گی۔

Leave a Comment

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

تازہ ترین

ویڈیو

Scroll to Top

ہر پاکستانی کی خبر

تازہ ترین خبروں سے باخبر رہنے کے لیے ابھی سبسکرائب کریں۔