ہر پاکستانی کی خبر

امریکی سینیٹ کی کمیٹی نے پاکستان پر زور دیا ہے کہ وہ پرتشدد مظاہروں کو کم کرے۔

Image Source - Google | Image by
Dawn Urdu

امریکی سینیٹ کی ایک کمیٹی نے پاکستان کی حکومت سے کہا ہے کہ وہ انٹرنیٹ کی سہولت بحال کرے اور ملک میں کشیدگی کم کرے۔

ڈان اخبار کی ایک رپورٹ اور سوشل میڈیا پر پوسٹ کیے گئے ایک سرکاری بیان کے مطابق، امریکی سینیٹ کی خارجہ تعلقات کمیٹی نے پاکستان کی صورتحال پر تشویش کا اظہار کیا ہے اور وہاں کی پیش رفت پر گہری نظر رکھے ہوئے ہے۔

کمیٹی کے چیئرمین سینیٹر باب مینینڈیز نے کہا کہ وہ تناؤ کو کم کرنے کی کوششوں کی حمایت کرتے ہیں اور انٹرنیٹ سروسز تک عوامی رسائی کی فوری بحالی پر زور دیتے ہیں۔

انہوں نے دعویٰ کیا کہ انٹرنیٹ بند کرنے سے پاکستانی شہریوں کی آزادیوں کو نمایاں طور پر محدود کیا جاتا ہے، بشمول ان کے معلومات تک رسائی کا حق اور دیگر آزادی۔

یہ کمیٹی امریکی خارجہ پالیسیاں بنانے میں اہم ہے، یہ فیصلہ کرتی ہے کہ ان پالیسیوں پر پیسہ کیسے خرچ کیا جاتا ہے، اور وہ تمام سفارتی تقرریوں کو قبول یا مسترد کر سکتی ہے۔

اقوام متحدہ کے حقوق کے سربراہ نے پاکستان کی سکیورٹی فورسز پر زور دیا کہ وہ سابق وزیر اعظم عمران خان کی نظربندی کی وجہ سے پھیلی بدامنی کے دوران احتیاط سے کام لیں اور مظاہرین پر تشدد سے گریز کریں۔

خبر رساں ادارے ’اے ایف پی‘ کے مطابق اقوام متحدہ کے ہائی کمشنر برائے انسانی حقوق وولکر ترک نے ایک ٹویٹ میں کہا کہ سیاسی تنازعات کے حل کے لیے آزادی اظہار، پرامن احتجاج اور قانون کی حکمرانی کی ضرورت ہے۔

الیکشن کی تاریخ

 

امریکہ میں ایک سینیٹر محکمہ خارجہ پر زور دے رہا ہے کہ وہ درخواست کرے کہ حکومت پاکستان ان کے انتخابات کی تاریخ کا اعلان کرے، اور دیگر قانون ساز بھی صورتحال پر گہری نظر رکھے ہوئے ہیں۔

مزید برآں، امریکہ میں پی ٹی آئی کے پیروکاروں نے عمران خان کو رہا کرنے کے سپریم کورٹ کے فیصلے پر جشن منایا، لیکن اس کے باوجود انہوں نے پاکستان بھر میں پارٹی ارکان پر حکومتی دباؤ کے خلاف مظاہرے کئے۔

سینیٹر کرس وان ہولن نے پاکستان کی موجودہ صورتحال پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ وہ صورتحال پر گہری نظر رکھے ہوئے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ وہ آج کچھ اہم اہلکاروں کے ساتھ محکمہ خارجہ کی موجودہ صورتحال پر بات چیت کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں۔

کراچی سے تعلق رکھنے والے جمہوری سینیٹر نے تجویز دی کہ پاکستان کو موجودہ سیاسی بحران کے حل کے طور پر انتخابات کو استعمال کرنا چاہیے۔

انہوں نے کہا کہ محکمہ خارجہ کے نمائندوں کے ساتھ بات چیت کے دوران وہ انتخابات کی تاریخوں کی تصدیق کی ضرورت پر زور دیں گے، جس سے پاکستان کے شہری بغیر کسی تعصب یا پابندی کے اپنے لیڈروں کو ووٹ دینے کی اجازت دیں گے۔

Leave a Comment

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

تازہ ترین

ویڈیو

Scroll to Top

ہر پاکستانی کی خبر

تازہ ترین خبروں سے باخبر رہنے کے لیے ابھی سبسکرائب کریں۔