ہر پاکستانی کی خبر

منکی پاکس کیسے منتقل ہوتا ہے؟ وزارت قومی صحت کی جانب سےاعلامیہ جاری

اسلام آباد: وزارت قومی صحت کے ایک بیان کے مطابق مونکی پوکس ایک وائرل زونوٹک متعدی بیماری ہے جو متاثرہ جانوروں سے انسانوں میں پھیلتی ہے۔
تفصیلات سے پتہ چلتا ہے کہ پاکستان میں بھی منکی پاکس کے کیسز رپورٹ ہوئے ہیں۔ اس کے جواب میں وزارت قومی صحت نے ایک بیان جاری کیا جس میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ ڈبلیو ایچ او نے مانکی پوکس کو 2022 کے لیے عالمی صحت عامہ کے لیے خطرہ قرار دیا ہے۔
وزارت قومی صحت کے مطابق 111 ممالک میں تاحال منکی پاکس کے کیسز رپورٹ ہو چکے ہیں، عالمی سطح پر منکی پاکس کے 87 ہزار کیسز، 119 اموات ہو چکی ہیں، تاہم اگست 2022 سے منکی پاکس کے عالمی کیسز میں کمی ریکارڈ کی گئی۔
وزارت کا کہنا ہے کہ پاکستان میں مئی 2022 سے تاحال منکی پاکس کے 22 مشتبہ سیمپلز این آئی ایچ بھجوائے گئے تھے، یہ سیمپلز ملک کے مختلف حصوں سے بھجوائے گئے تھے، ملک میں منکی پاکس کا پہلا کیس پمز اسپتال میں زیر علاج ہے۔

وزارت قومی صحت کے مطابق، ملک میں مقامی منکی پاکس کے پھیلنے کا کوئی ثبوت نہیں ہے، لیکن بیماری کے اضافی کیسز کی تحقیقات ابھی جاری ہیں۔ منکی پاکس پاکستان سے باہر نہیں پھیلا۔ متعلقہ صحت حکام کو ایڈوائزری جاری کی جا چکی ہے۔
اعلامیے کے مطابق، بین الاقوامی ہوائی اڈے دوسرے ممالک سے آنے والے زائرین کی اسکریننگ کریں گے، اور وفاقی اور صوبائی محکمہ صحت کے حکام کو حکم دیا گیا ہے کہ وہ منکی پاکس کے لیے نگرانی اور ٹیسٹنگ کو تیز کریں، ساتھ ہی ساتھ مشتبہ کیسز اور منکی پاکس کے مریضوں کے قریبی لوگوں پر فوری ٹیسٹ کریں۔ . این آئی ایچ کو کہا گیا ہے کہ وہ اس سلسلے میں کیسز کا سراغ لگا کر جانچ کرے۔
وزارت صحت، این سی او سی اور این آئی ایچ ملک کی صورتحال پر گہری نظر رکھے ہوئے ہیں۔ منکی پاکس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے مثبت کیسز کو فوری طور پر آئیسولیٹ کر دیا جائے گا۔

Leave a Comment

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

تازہ ترین

ویڈیو

Scroll to Top

ہر پاکستانی کی خبر

تازہ ترین خبروں سے باخبر رہنے کے لیے ابھی سبسکرائب کریں۔